سرخ مرچ کا ایسا فائدہ کہ بڑھاپے میں بھی جوانی کی بہاریں لوٹ آئیں، سائنسدانوںنے وہ بات بتا دی جو آپ کو پہلے کبھی معلوم نہ ہو گا

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) سرخ مرچوں کا استعمال ان مخصوص عصبی خلیات کو کبھی کمزور اور خراب نہیں ہونے دیتا جو دماغ کے جسمانی اعضاءکی حرکت کو کنٹرول کرنے والے حصے میں موجود ہوتے ہیں، سائنسدانوں نے مرچ کا ایسا فائدہ بتادیا کہ کوئی شخص اب ان سے منہ نہیں موڑ سکے گا۔ تفصیلات کے مطابق غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق سائنسدانوں نے بتایا ہے کہ سرخ مرچوں کا استعمال ان مخصوص عصبی خلیات کو کبھی کمزور

اور خراب نہیں ہونے دیتا جو دماغ کے جسمانی اعضاءکی حرکت کو کنٹرول کرنے والے حصے میں موجود ہوتے ہیں۔یہ خلیے اگر کمزور ہو جائیں تو انسان الزایمر، پارکنسنز اور رعشہ جیسی مہلک بیماریوں میں مبتلا ہو جاتا ہے۔تحقیقاتی ٹیم کے سربراہ ڈاکٹر مائیکل گریگر کا کہنا تھا کہ ”یہ مخصوص عصبی خلیے عمر کے ساتھ ساتھ کمزور ہونا شروع ہو جاتے ہیں لیکن جو لوگ زندگی میں سرخ مرچوں کا باقاعدہ استعمال کرتے رہے ہوں ان میں یہ خلیے بڑھاپے میں بھی طاقتور اور متحرک رہتے ہیں جس کی وجہ سے وہ ان سے منسلک عصبی بیماریوں سے محفوظ رہتے ہیں۔

Comments

comments

کیٹاگری میں : صحت

اپنا تبصرہ بھیجیں